مختصربیان صوفی محمدشوکت علی قادری2دسمبر

Category جمعہ کا بیان
Byصوفی شوکت علی قادری

ابتداء ہے اسکی اسماعیل انتہا ہے حسین
غریب و سادہ و رنگیں ہے داستانِ حرم

تحریک انوارِمدینہ کے قائد ترجمانِ حقیقت پیر صوفی محمد شوکت علی قادری صاحب نے واقعہ کربلاکے پس منظر میں امام عالی مقام کو خراج عقیدت پیش کرتے ہوئے فرمایا کہ حضرت حسین 6 ماہ کے پیاسے بچے کو ہاتھوں میں اٹھائے ہوئے ، حلق میں تیر پیوست ہوا، خون کا فوارہ چھوٹا مگر سید الشہداء کے ہاتھ سے صبر کا پیمانہ نہ چھوٹا۔ زمانے نے ان جیسا صابر پھر کبھی نہ دیکھا۔ سیدنا حسین نے کرب و بلامیں جیسی نماز ادا فرمائی، صدیاں بیت گئیں وقت نے دوبارہ ویسی نماز ہوتے نہیں دیکھی۔ وہ خاکِ کربلا پر اپنے معبود کے سامنے آخری بار سجدہ ریژ ہوئے، روئے زمین آج تک ایسے سجدہ شبیری کو ترس رہی ہے۔ شیر حسین نے نیزے پر قرآن پڑھا، اس کے بعد سے کائنات ایسی تلاوتِ کلام ِ ربی سننے سے قاصر ہے۔ ایثار صبرہ استقلال طاعتِ خداوندی اور لازوال و بے مثال قربانیوں کے ایسے مناظر چشمِ فلک کو دوبارہ دیکھنے نصیب نہ ہوئے۔

اپنی رائے دیں :

نام:
ای میل:
ملک:
رائے:

Send Feedback

Tell us what you think!

Your opinions and comments are very important to us and we read every message that we receive. Due to a high volume of messages, we're not always able to provide a personal response, but we do appreciate your taking the time to fill out our feedback form below.

Message type: Comment    Complaint    Request
*Your Name:
*Your Email:
*Feedback: